trump against Pakistan 497

صدر ڈولنڈ ٹرنپ کی پاکستان کے معتلق سخت پالیسی ،اعلیٰ عسکری قیادت نے صلاح مشورہ کرنا شروع کر دیا

تحریر ۔ رضوان رفیق باجواہ

امریکی صدر ڈولنڈ ٹرنپ کی پاکستان کے متعلق سخت پالیسی کے بعد ملکی سالمیت کو درپیش خطرات کے حوالے سے اعلیٰ عسکری قیادت نے صلاح مشورہ شروع کر دیا
اس حوالے سے کہا جا رہا ہے کہ امریکی حکومت کی طرف سے مزید ڈرون حملوں اور سرجیکل اسٹرئیک کا امکان ہے عسکری قیادت نے ہنگامی طور پر بلاے جانے والے اجلاس میں ایسے اقدامات کو ملکی سالمیت کے لیے خطرہ قرار دیا ہے فوضی قیادت نے ان خطرات کو سفارتی سطح پر اجاگر کرنے اور دوست ممالک کی مدد کے لیے حکومت کو اقدامات کرنے کے لیے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی وطن واپسی پر ان کو سنگین خطرات سے اگاہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اس سلسلے میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے جس طرح حال میں ہی ارکان پارلیمینٹ کو بریفنگ دی اسی سلسلے کو اگے بڑھاتے ہوئے وزیر اعظم کو ملکی خطرات سے اگاہ کیا جائے گا ۔ فوجی قیادت نے اٹیمی اثاثوں کی حفاظت کے لیے پالیسی کو ازسرنو تشکیل دیا ہے اور اس میں بنادی تبدیلیاں کر کے اٹمیی اثاثوں کو مزید محفوظ بنا دیا ہے

اپنی رائے دیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں