quetta blast inklaab news 18

کوئٹہ میں خودکش دھماکہ، بلوچستان سیکیورٹی کے 8 اہلکاروں سمیت15 افراد شہید

کوئٹہ: بلوچستان اسمبلی کے قریب زرغون روڈ پر خودکش حملے کے نتیجے میں 8 پولیس اہلکاروں سمیت 15 افراد شہید جب کہ 17 سے زائد افراد زخمی ہوئے
نمائندہ انقلاب نیوز کے مطابق دھماکا اسمبلی کی عمارت سے تقریباً 300 میٹر کے فاصلے پر ہوا جس میں ایک پولیس وین کو نشانہ بنایا گیا جب کہ اس سے قریب موجود ایک مسافر بس بھی متاثر ہوئی۔

ڈپٹی کمشنر کوئٹہ فرخ عتیق نے بھی تصدیق کی کہ دھماکے میں پولیس کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔

آئی جی بلوچستان معظم جاہ انصاری کے مطابق زخمیوں میں سے 6 کی حالت تشویش ناک ہے۔ انہوں نے کہا کہ مزید حملوں کے خدشے کے باعث دھماکے کی جگہ کو گھیرے میں لے لیا گیا ہے۔

سیکیورٹی ذرائع کے مطابق خودکش حملہ آور پیدل تھا، جس کی عمر 16 سے 21 سال کے درمیان تھی۔

حکام نے بتایا کہ دھماکے میں 9 سے 12 کلو بارودی مواد استعمال کیا گیا جبکہ خودکش حملہ آور کے اعضا اور دیگ​ر شواہد کا تجزیہ کیا جارہا ہے۔

ریسکیو ذرائع کے مطابق دھماکے میں زخمی ہونے والوں کو مقامی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

دھماکے کی جگہ کو قانون نافذ کرنے والے اداروں نے گھیرے میں لے لیا جب کہ صوبائی اسمبلی اور اطراف کے علاقوں میں سیکیورٹی سخت کر دی گئی ہے۔

دوسری جانب وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کوئٹہ دھماکے کی شدیدمذمت کی، انہوں‌نے کہا کہ دشمن ایسی بزدلانہ کارروائیاں کر کے ہمارے ارادے متزلزل نہیں کر سکتا.

شاہد خاقان عباسی نے شہداء کے درجات کی بلندی اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا بھی کی۔

inklaab news

اپنی رائے دیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں